ملکی سالمیت کے خاطر اور معاشی بحران پر قابو پانے کے لئے جدوجہد جاری ہے‘مولانا عبدالواسع

0 26

کوئٹہ:جمعیت علماءاسلام بلوچستان کے صوبائی مجلس شوری کا اجلاس صوبائی امیر و وفاقی وزیر ہاو¿سنگ اینڈ ورکس مولانا عبدالواسع کے زیر صدارت صوبائی دفتر میں ہوا اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے اور 29 مئی کو ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے تیاریوں اور مشکلات کا جائزہ لیا گیا اور اجلاس میں صوبے اور ملکی سیاسی صورتحال کا بھی جائزہ لیا گیا اور ساتھ ہی پارٹی امور کا بھی جائزہ لیا گیا اجلاس میں صوبائی شوری کے ارکان نے بھرپور شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عبدالواسع نے کہا کہ سابقہ حکمرانوں نے آئین اور قانون کو پامال کیا اور پی ڈی ایم اس وقت مجبور ہوگئی کہ عمران نیازی کو ہٹانے کے لیے آئینی طریقہ اختیار کرنا ہے اور تمام جماعتوں کے قائدین نے مل کر اس کے خلاف جدوجہد کی اور کرسی سے ہٹانے پر مجبور کردیا ہے اور ملکی سالمیت کے خاطر اور معاشی بحران پر قابو پانے کے لئے جدوجہد جاری ہے انہوں نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات میں بھرپور کامیابی حاصل کرینگے اور آئندہ انتخابات میں جمعیت کامیابی حاصل کرینگے اضلاع کے امراء پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ عوام کے پاس جاکر جمعیت کا پیغام گھر گھر پہنچا دیں انہوں نے کہا کہ مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے تقدس کو پامال کرنے والوں کا ہر محاذ پر تعاقب کریں گے جے یو آئی مذہبی اقدار سمیت عوامی مفاد کے لئے ہر وقت میدان میں ہے انہوں نے کہا کہ کارکن تیاریاں شروع کردیں ، نیازی کے جھوٹے بیانیے کو دفن کرنے کا وقت آگیا ہے۔جے یو آئی ہی وہ واحد مذہبی سیاسی جماعت ہے جس نے جمہوریت کے ساتھ ساتھ آئین کی اسلامی دفعات اور شعائر اسلام کا تحفظ کرنا ہے جے یو آئی کا پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کا مشن ان شاء اللہ جاری رہے گا انہوں نے کہا کہ ایک نااہل حکومت کو اقتدار سے علیحدہ کرنے میں جے یو آئی قیادت اور کارکنوں کی جدوجہد کو یاد رکھا جائے گا انہوں نے کہا کہ اس وقت ہمیں بہت محنت کرنے کی ضرورت ہے وقت کم ہے لیکن عوام کے مسائل کو حل کرنا ہماری ذمہ داری میں شامل ہے مسائل کے حل کیلئے بھرپور کوششیں کی جائیں گے انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کا ایجنڈا ملک اور اسلام دشمن ہے ان کے عزائم کو ناکام بنانا ہوگا ورنہ حالات مزید خراب ہو نگے انہوں نے صوبہ میں جاری بجلی کی لوڈشیڈنگ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ صوبے میں بجلی کی فراہمی کے لئے وفاقی حکومت سے اس بارے بات کروں گا کیونکہ بلوچستان کا انحصار زراعت پر ہے اور بجلی نہ ہونے کی وجہ سے زراعت کا شعبہ تباہ ہوچکا ہے انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات کے لئے بھی تیاریاں تیز کی جائے تاکہ صوبہ کے مسائل کو حل کیا جا سکے انہوں نے خضدار میں زلزلے کی وجہ سے مالی نقصانات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت فوری طور پر متاثرین کی امداد کرےاور حالات کو معمول پر لانے کے لیے اقدامات کیے جائیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.