دشمن پاکستان اور افغانستان کے تعلقات میں بگاڑ چاہتاہے، سینیٹر ثمینہ ممتاز زہری

0 66

مرکزی نائب صدر بلوچستان عوامی پارٹی سینیٹر ثمینہ ممتاز زہری نے پاکستان اور افغانستان بارڈر پر پاکستانی شہری آبادی پر افغان سرزمین سے فائرنگ کے واقعے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور افغانستان میں امن و امان کی صورتحال کو خراب کرنے کی مذموم کوشش کی جارہی ہے جس کی کسی صورت اجازت نہیں دی جائے گی ملکی سیکیورٹی انتظامات کو مزید موثر بنانے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دشمن ہمیں غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے تاکہ اپنے مذموم مقاصد حاصل کر سکے لیکن وطن عزیز پاکستان میں امن و امان کی صورتحال پر سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔حکومت افواج اور دیگر سیکیورٹی اداروں کے ساتھ مل کر مضبوط لائحہ عمل طے کر رہی ہے۔سینیٹر ثمینہ ممتاز زہری نے افغانستان اور پاکستان میں تخریب کاری کے حالیہ واقعات اور گزشتہ روز افغان بارڈر کے دوسری جانب سے پاکستانی شہری آبادی پر اندھا دھند فائرنگ کے واقعہ پر شدید رنج و غم اور غصے کا اظہارکرتے ہوئے اپنے مذمتی بیان میں کہا کہ پاکستان اور افغانستان میں اچانک امن و امان کی صورتحال میں خرابی اور حملوں کے پیچھے ہمارا ازلی دشمن بھارت کا ہاتھ ہے جو نہیں چاہتا کہ پاکستان اور افغانستان میں امن قائم ہو۔ حالیہ واقعہ جس میں بارڈر پر پاکستانی شہری آبادی کو افغان بارڈر کی دوسری جانب سے فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا ہے جس میں قیمتی جانوں کے ضیاع ہونے کے ساتھ ساتھ کئی پاکستانی شہری زخمی بھی ہوئے ہیں ۔یہ واقعہ سوچے سمجھے منصوبے کے تحت پاکستان اور افغانستان کے درمیان دوریاں پیدا کرنے کے لئے بنایا گیا جس کا مقصد بارڈر کے دونوں جانب حالات خراب کرنا تھا۔انہوں نے کہا کہ یہ امر مسلمہ حقیقت ہے کہ افغانستان میں حالات خراب ہونے کی صورت میں اس کا سب سے زیادہ اثر پاکستان پر پڑتا ہے ۔ ملک دشمن عناصر وطن عزیز کی تعمیر و ترقی اور امن و امان کو برداشت نہیں کر رہے اور اپنے مذموم مقاصد کے حصول کے لئے سوچے سمجھے منصوبے کے تحت نہتے شہریوں اور سیکیورٹی فورسز پر بزدلانہ حملے کر رہے ہیں جس کی شدید مذمت کرتے ہیں اور دشمن کو یہ باور کرا دینا چاہتے ہیں کہ اس طرح کے بزدلانہ حملے پرعزم قوم کے حوصلے پست نہیں کر سکتے ۔سینیٹر ثمینہ ممتاز زہری نے کہا کہ ملک میں سیاسی عدم استحکام کی صورتحال سے فائدہ اٹھاتے ہوئے دشمن عناصر کی جانب سے ایک بار پھر ملک میں سوچے سمجھے منصوبے کے تحت امن و امان کی صورتحال کو خراب کی سازش کی جارہی ہے تاکہ ملکی صورتحال کا فائدہ اٹھا کر اپنے مذموم مقاصد حاصل کر سکیں جو کہ شکست خوردہ عناصرکی جانب سے ملک کو غیر مستحکم کرنے کی ناکام کوشش ہے۔انہوں نے کہا کہ دشمن اور مفاد پرست عناصر مادر وطن پاکستان کی تعمیر و ترقی و خوشحالی اور امن و امان کی صورتحال سے خوش نہیں اور اپنے مذموم مقاصد کے حصول کے لئے گھناﺅنی کارروائیاں کرتے ہیں لیکن الحمداللہ پوری قوم، افواج اور دیگر سیکیورٹی فورسز نے ہمیشہ ملک دشمن عناصر کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملا کر ان کی بیخ کنی کی ہے ۔ افواج اور دیگر سیکیورٹی فورسزنے بڑی قربانیوں کے بعد ملک سےتخریب کاری کو ختم کیا ہے اور تخریب کاراور ملک میں امن وامان کے قیام اور عوام کے جان و مال کے تحفظ کو ممکن بنانے کے لئے ہمہ وقت اپنا کردار ادا کیا ہے۔ انہوں نے ہمسایہ ملک افغانستان سمیت بلوچستان اورملک کے دیگر حصوں میںایسے واقعات اور پاک افغان بارڈر پر پاکستانی شہریوں کی جاں بحقکے واقعات میں جاں بحق ہونے والوں اور زخمیوں کے لئے دعا کی اللہ تعالیٰ جاں بحق ہونے والوں کو اپنے جوار رحمت میں جگہ دے اور زخمیوں کو جلد صحتیابی عطا فرمائے۔انہوں نے پوری قوم خاص کر نوجوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کہا کہ ہم سب کا قومی فریضہ ہے کہ امن و امان کی بہتری اور وطن کی حفاظت کے لئے اپنا اپنا کردارادا کریں اور دشمنوں کو باور کرادیں کہ پاکستانی عوام ٹخریب کاری کے خلاف متحد اور ایک پلیٹ فارم پر ہے اور تخریب کاری کے ایسے بزدلانہ واقعات ہمارے حوصلے پست نہیں کر سکتے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.