اداروں کی مکمل مدد کے باوجود اندرونی اور بیرونی دونوں محاذوں پر پی ٹی آئی کی حکومت مکمل ناکام دکھائی دے رہی ہے،سابق وزیراعلیٰ بلوچستان

ملک ایک غیر یقینی صورتحال کیفیت سے گزر رہا ہے ،ڈاکٹرعبدالمالک بلوچ

اداروں کی مکمل مدد کے باوجود اندرونی اور بیرونی دونوں محاذوں پر پی ٹی آئی کی حکومت مکمل ناکام دکھائی دے رہی ہے،سابق وزیراعلیٰ بلوچستان
کوئٹہ( امروز ویب ڈیسک) نیشنل پارٹی کی مرکزی کمیٹی کا دو روزہ اجلاس مرکزی صدر سابق وزیر اعلی بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کی صدارت میں منعقد ہوا اجلاس سے مرکزی صدر ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ، مرکزی سیکریٹری جنرل جان محمد بلیدی، مرکزی نائب صدرسابق سینیٹر میر کبیر محمد شہی، رہنما سینیٹر طاہر بزنجو ، سینٹر میر محمد اکرم دشتی نے کہاکہ ملک ایک غیر یقینی صورتحال کیفیت سے گزر رہا ہے اداروں کی مکمل مدد کے باوجود اندرونی اور بیرونی دونوں محاذوں پر پی ٹی آئی کی حکومت مکمل ناکام دیکھائی دے رہا ہے فارن پالیسی کا یہ حال ہے

کہ بین الاقوامی طور پر کوئی پاکستان کا ساتھ دینے کو تیار نہیں اندرونی طور پر ملک شدید معاشی بدحالی کا سامنا کررہا ہے ملکی معیشت بدترین صورتحال سے دوچار ہے مہنگائی میں ہر روز اضافہ ہوتا جارہا ہے منافع بخش ادارے بند ہوتے جارہے ہیں لوگوں کو نوکریوں سے فارغ کیا جارہا ہے اسٹیل مل بند کردیا گیا ہے جبکہ پاکستان ائیر لائن بند ہونے کو ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کی سیاست عملا اصول و اقدار سے فارغ ہے اور اب سب کچھ جائز ہوچکا ہے سینٹ کہ چیرمین کے انتخاب میں جو تماشہ دیکھنے کو ملا اس سے لگ رہا ہے

کہ سلیبس میں ابھی تک کوئی تبدیلی نہیں ہے۔ اجلاس سے ایوب ملک، خیربخش بلوچ، یاسمین لہڑی، رفیق کھوسہ، میراں بخش، پھلین، جی ایم گولہ، سردار آصف شیر جمالدینی، محراب بلوچ، رجب علی رند، حاجی عطامحمد بنگلزئی، نادر بلوچ، عبدالحمید ایڈووکیٹ، مرزا مقصود احمد، اسلم بلوچ، زبیر بلوچ، نیاز بلوچ، اشرف حسین اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔نیشنل پارٹی نے فیصلہ کیاکہ وہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کا باقاعدہ حصہ رہے گی اور اس کو فعال و متحرک کرنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرے گی۔ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ سیاسی و جمہوری سیاسی جماعتوں کا ایک اتحاد ہے

جو ایک درست بیانئے کے ساتھ اپنی جدوجہد کو آگے بڑھا رہا ہے سیاسی جماعتوں اور اتحادوں میں اختلافات ہوتے رہتے ہیں اور باہمی مشاورت و فیصلوں سے انھیں حل بھی کیا جاتا ہے نیشنل پارٹی کی مرکزی کمیٹی کا اجلاس آج بھی جاری رہے گا جس میں تنظیمی مسائل زیربحث آئیں گے اور آئندہ کا لائحہ عمل تشکیل دیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں