افغانستان دہشتگرد سرگرمیوں میں ملوث افراد کیخلاف سخت ایکشن لے: دفترِ خارجہ

0 229

دفترِ خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ افغانستان کی حکومت پاکستان میں دہشت گرد سرگرمیوں میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کرے، پاک افغان سرحدی علاقہ محفوظ بنائے۔

جاری کیے گئے بیان میں ترجمان دفترِ خارجہ نے کہا ہے کہ گزشتہ چند دنوں میں پاک افغان سرحد پر سرحد پار سے پاکستانی سیکیورٹی فورسز کو نشانہ بنانے کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ پاکستان نے بارہا افغان حکومت سے سرحدی علاقہ محفوظ بنانے کی درخواست کی ہے، دہشت گرد افغان سر زمین کو پاکستان کے اندر کارروائیوں کے لیے استعمال کر رہے ہیں۔

ترجمان دفترِ خارجہ نے کہا کہ سرحدی علاقے میں ٹی ٹی پی سمیت کالعدم دہشت گرد گروہ پاکستان کی حفاظتی چوکیوں پر حملے کر رہے ہیں، دہشت گردوں کے حملوں میں متعدد پاکستانی فوجیوں کی شہادت ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ 14 اپریل کو بھی شمالی وزیرستان میں افغانستان سے دہشت گردوں نے پاک فوج کے 7 جوانوں کو شہید کیا۔

ترجمان دفترِ خارجہ کا کہنا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کے لیے افغان سر زمین استعمال ہونے کی پاکستان شدید مذمت کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ دہشت گردی پاک افغان سرحد پر امن و استحکام برقرار رکھنے کی ہماری کوششوں کے لیے نقصان دہ ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ افغانستان پاکستان میں دہشت گرد سرگرمیوں میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی کرے اور پاک افغان سرحدی علاقے کو محفوظ بنائے۔

دفترِ خارجہ کے ترجمان نے مزید کہا ہے کہ افغانستان کی آزادی، خود مختاری اور علاقائی سالمیت کے احترام کا اعادہ کرتے ہیں۔

ترجمان دفترِ خارجہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ پاکستان تمام شعبوں میں دو طرفہ تعلقات مضبوط بنانے کے لیے افغان حکومت کے ساتھ کام کرتا رہے گا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.