رمیز راجہ نے اعلیٰ شخصیت کے مشورے پر استعفیٰ نہ دینے کا فیصلہ کیا

0 31

لاہور : پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمینرمیز راجہجو اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے سرانجام دے رہے ہیں اور ان کا اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔ تفصیلات کے مطابق نئی بننے والی حکومت بھی سابق کرکٹر کو گھر بھیجنے سے گریز کر رہی ہے۔ اگرچہ بہت سے لوگ چاہتے ہیں کہ رمیز راجہ خود مستعفی ہو جائیں لیکن انہوں نے یہ قدم اعلیٰ شخصیت کے مشورے پر نہیں اٹھایا۔
اس وقت کرکٹ حکومت کی اہم ترجیحات میں شامل نہیں ہے۔ وزیر اعظم شہباز شریف کے کچھ قریبی لوگ چیئرمین پی سی بی بننا چاہتے ہیں لیکن سرپرست اعلیٰ نے اس معاملے میں مداخلت نہیں کی۔ رمیز راجہ کو ہٹانے سے ایک نیا پنڈورا باکس کھل سکتا ہے کیونکہ وہ اپنے فرائض بخوبی انجام دے رہے ہیں جس کے باعث حکومت فی الحال انہیں ہٹانے سے گریز کر رہی ہے۔

دوسری جانب رمیز راجہ کو لانے والے سابق وزیراعظم عمران نے کہا کہ پی سی بی چیئرمین شپ کے حوالے سے فیصلہ کرنے میں آزاد ہوں۔

پیر کو اپنی رہائش گاہ پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ رمیز راجہ ان کے کھلاڑی ہیں اور آخری گیند تک لڑیں گے۔ عمران خان نے کہا کہ رمیز راجہ پی سی بی کی چیئرمین شپ کے حوالے سے فیصلہ کرنے کے لیے آزاد ہیں، وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ رمیز میرے کھلاڑی ہیں اور وہ آخری دم تک اپوزیشن کا مقابلہ کریں گے۔ یاد رہے کہ رمیز راجہ ستمبر 2021ء میں اس وقت کے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے نامزد کیے جانے کے بعد بلا مقابلہ چیئرمین پی سی بی منتخب ہوئے تھے

Leave A Reply

Your email address will not be published.