اہل بلوچستان کیساتھ سیکورٹی فورسزوخودساختہ بااختیار طبقات کا رویہ مناسب نہیں : مولانا ہدایت الرحمان بلوچ

0 29

کوئٹہ : حق دو تحریک کے قائد جماعت اسلامی کے صوبائی جنرل سیکرٹری مولانا ہدایت الرحمان بلوچ نے کہاکہ اہل بلوچستان کیساتھ سیکورٹی فورسزوخودساختہ بااختیار طبقات کا رویہ وسلوک مناسب نہیں۔بارڈر،ائرپورٹس،چیک پوسٹوں،تھانہ،کچہری میں تذلیل مذید برداشت نہیں کیا جائیگا اہل بلوچستان کو انسان سمجھا جائے اور کچھ نہیں انسانی حقوق ہی دیے جائے تو مہربانی ہوگی قانونی تجارت،سیکورٹی فورسز کی مرضی سے بنی ہوئی چیک پوسٹیں اور جائز وحلال کاروبار،بارڈرٹریڈمیں رکاوٹیں،بارڈر پر رہائش پزیر غریب چھوٹے تاجروں کے مسائل کے حل کیلئے ہماری جدوجہد جار ی رہے گی۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے گوادر میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیاانہوں نے کہاکہ بلوچستان کے عوام بلخصوص نوجوانوں میں حکمرانوں سیکورٹی فورسزکے خلاف غم وغصہ پایا جاتاہے یہ سب حکمرانوں کے مظالم،زیادتیوں،بدعنوانی ولوٹ مار کی وجہ سے ہے بلوچستان کے عوام کو پینے کا صاف پانی میسر نہیں،اعلیٰ عہدوں پر غیروں کو قابض کیا گیا ہے ملازمتیں برائے فروخت،تعلیم وصحت کی سہولیات نہ ہونے ے برابرہیں۔بلوچستان کے بارڈرپر مقیم غریب تاجر جائز وحلال تجارت کی راہ میں کسی قسم کی رکاوٹ پیش کرنا حکومت کیلئے مناسب نہیں۔بدقسمتی سے حکومت تاجروں کو جائز کاروباربھی نہیں کرنے دیتی،رشوت بھتہ خوری،بدعنوانی اور سفار ش کی وجہ سے غریب پڑھے لکھے اہل نوجوانوں کا کوئی سننے والا نہیں نوجوان موجودہ نظام سے تنگ آگیا ہے اس ظلم جبر لاقانونیت کے خلاف ہر فورم پرآوازبلند کرنے کی ضرورت ہے۔ سیکورٹی فوسرزکی اپنی مرضی کی چیک پوسٹیں قائم کرنا ان چیک پوسٹوں کو نفرت بڑھانے کا ذریعہ بناناٹھیک نہیں۔ فورسزکی جانب سے اپنی مرضی سے جگہ جگہ قائم چیک پوسٹوں کو فوری طور پر ختم کیا جائے تاکہ لوگوں کوآمدورفت میں آسانی رہے اور سکون واطمینان سے تجارت وکاروبار کرسکیں۔ عوام کیساتھ غیروں جیسا سلوک کسی طریقے سے بھی مناسب نہیں یہ حالات کو مزید خراب کرنے کے مترادف ہے بلوچستان میں پہلے سے غربت بے روزگاری کاروبار نہ ہونے کے برابر ہے زراعت تباہ ہوگئی۔حکمرانوں نے بلوچستان کے مظلوم عوام سے تووسائل چھین لیے ہیں لیکن اللہ تعالیٰ نے تجارت کے جوجائزمواقع فراہم کیے ہیں وہ بھی چھینناچاہتے ہیں۔ منشیات واسلحہ غیر قانونی چیزیں ہیں اس پر ہر صورت سختی ہونی چاہیے جبکہ دیگر اشیائے ضروریہ عام استعمال کی چیزوں پو سختی ٹھیک نہیں۔بے روزگار نوجوان،تاجر دیگر افراد کہاں جائیں اور کیا کریں حکومت سیکورٹی فورسزکو عوام سے دوستانہ تعلقات قائم کرناچاہیے دشمن جیساسلوک ظالمانہ جابرانہ رویوں کی وجہ سے دوریاں وخلیج پیدا ہوتی ہے جو عوام اور ملک کے مفادمیں نہیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.