سبی سی ٹی ڈی کے قیام سے دہشت گردی سمیت مختلف جرائم کا مکمل خاتمہ ممکن ہوگا، آئی جی عبدالخالق شیخ

0 79

سبی سی ٹی ڈی کے قیام سے دہشت گردی سمیت مختلف جرائم کا مکمل خاتمہ ممکن ہوگا، منشیات جیسی لعنت کا خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے، پولیس اور عوام کے درمیان دوستانہ ماحول سے جرائم کا خاتمہ ہوگا، جلد ہی تربت وومن پولیس اسٹیشن کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔ آئی جی پولیس بلوچستان عبدالخالق شیخ کا سی ٹی ڈی تھانہ کا افتتاح کے موقع پر میڈیا سے گفتگو۔

تفصیلات کے مطابق انسپیکٹر جنرل آف پولیس بلوچستان عبدالخالق شیخ نے گزشتہ روز سبی میں سی ٹی ڈی تھانہ کا افتتاح شہید فیض محمد کے والد اور ان کے بچوں سے کرایا. دوران افتتاح سی ٹی ڈی آفیسران سمیت ضلعی پولیس آفیسران علاقائی معتبرین بھی افتتاحی تقریب میں موجود تھے۔ انسپیکٹر جنرل آف پولیس کو سی ٹی ڈی بلڈنگ کے حوالے سے ایکسیئن بلڈنگ عتیق الرحمان نے بریفنگ دی۔ آئی جی بلوچستان عبدالخالق شیخ نے بلڈنگ کی تعمیر مقررہ وقت سے پہلے مکمل ہونے پر خوشی کا اظہارکیا۔ اس موقع پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوۓ انہوں نے کہا ہے کہ ہم شہدا کی قربانیوں کو کبھی فراموش نہیں کریں گے۔ ان کی خدمات ہمارے لیے باعث فخر اور مثل راہ ہیں۔ اسی وجہ سے سبی میں سی ٹی ڈی تھانہ کا افتتاح شہید کے بچوں اور ان کے والد سے کرایا ہے۔ شہداء کی خاندان خود کو اکیلا اور لاوارث مت سمجھیں ہر مشکل میں ہم ان کے ساتھ ہیں۔ شہیدفیض محمد کے بچوں کی پڑھائی کا خرچہ ہم ادا کریں گے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بلوچستان بھر میں ایسی سات بلڈنگ تعمیر کیے جا رہے ہیں۔ کوئٹہ کے بعد سبی میں دوسرا بلڈنگ مکمل ہوا ہے جس کا آج افتتاح کیا گیا۔

سی ٹی ڈی پولیس کو جدید طرز سے استوار کریں گے بلڈنگ مکمل ہونے کے بعد جدید گاڑیاں, اسلحہ اور تھانے میں استعمال ہونے والے سامان بہت جلد پہنچاۓ جائیں گے. سی ٹی ڈی کے قیام کا مقصد دہشت گردی اور مختلف جرائم کا مکمل خاتمہ کرنا ہے. سی ٹی ڈی کی خاموش کاروائیوں سے بلوچستان بھر میں امن وامان میں اضافہ ہوا ہے انہوں نے مزید کہا کہ ادارہ اپنے دائرہ اختیار میں رہ کرکام کرے گا حد سے تجاوز کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ اس کے علاوہ ڈسٹرکٹ پولیس کو بھی جدید طرز پر لارہے ہیں تاکہ شہر میں جو چھوٹے واقعات رونما ہو رہے ہیں ان کا بھی خاتمہ ممکن بنایا جا سکے۔ انسپیکٹر جنرل آف بلوچستان پولیس عبدالخالق شیخ کا کہنا تھا کہ ہم نےث منشیات اور پرائیوٹ گن مینوں کے خلاف مکمل پابندی عائد کردی ہے۔ جس کے خلاف کاروائیاں کوئٹہ شہر سے شروع کی گئی ہیں۔ کاروائیوں کے دوران ہمارا ایک جوان شہید اور آٹھ منشیات فروش ہلاک ہوۓ, منشیات جیسی لعنت کا خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے اور وقت کے ساتھ ساتھ منشیات کے خلاف کاروائیاں جارہی رہیں گی۔ قانون سے کوئی بھی بالاتر نہیں ہے۔ ہر کسی کو قانون پر عمل کرنا ہوگا۔

شہر کے امن وامان کو خراب کرنے کی اجازت ہرگز نہیں ہوگی جو بھی شخص امن و امان کو خراب کرنے میں ملوث پایا گیا تو اس کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جاے گی۔ پولیس اور عوام کا دوستانہ ماحول سے مختلف جرائم کا خاتمہ ممکن ہوسکتا ہے انہوں نے کہا کہ پولیس کی تنخواہیں دوسرے صوبوں کی طرح بڑھانے کے لیے سفارشات کر رہا ہوں۔ بہت جلد تربت وومن پولیس اسٹیشن کا قیام بھی عمل میں جلد لایاجاۓ گا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.