وزیراعلیٰ صوبے کے مسائل حل کرنے کیلئے سنجید ہ ہے، نور محمد دمڑ

وزیراعلیٰ صوبے کے مسائل حل کرنے کیلئے سنجید ہ ہے، نور محمد دمڑ

کوئٹہ ( امروز ویب ڈیسک) سنیئر صوبائی وزیر خزانہ حاجی نورمحمد خان دمڑ نے کہاکہ حکومت نے ینگ ڈاکٹرز ، پیرامیڈیکس ، نرسرز نے جو چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کیا ہے وزیراعلیٰ نے ان مطالبات کا جائزہ لینے اور حل کرنے کےلئے کمیٹی تشکیل دی گئی ہے ینگ ڈاکٹرز او پی ڈیز اور دیگر تمام جنرل سروسز کابائیکاٹ ختم کرکے صوبے کے غریب عوام کی حال پر رحم کرتے ہوئے صوبے کے دور دراز سے آنے والے غریبوں مریضوں کو علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کرے

وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو ڈاکٹرسمیت صوبے کے تمام سرکاری مسائل کے حل کےلئے کوشاں ہے ان خیلات کااظہار انہوں نے ینگ ڈاکٹرز ، پیرامیڈیکس احتجاجی کیمپ کادورہ کرنے کے دوران ڈاکٹروں اور پیرامیڈیکل اسٹاف فیڈریشن کے عہدیداروںاور ممبران سے بات چیت کرتے ہوئے کیا سنیئر صوبائی وزیر خزانہ حاجی نورمحمد خان دمڑ نے کہاکہ وزیراعلیٰ میرعبدالقدوس بزنجو نے ینگ ڈاکٹرز کے مسائل حل کرنے کےلئے کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جوکہ ینگ ڈاکٹرز کے ساتھ رابطہ میں ہے

مسائل حل کرنے کےلئے اجلاسوں کاانعقاد بھی کیا جارہا ہے انہوں نے کہاکہ ینگ ڈاکٹرز اور حکومتی کمیٹی کے درمیان جاری مذاکرات میں اگر کوئی ڈیڈ لاک ہے انہیں ختم کرنے میں بحیثیت سنیئر صوبائی وزیر خزانہ اور اپنے دیگر ساتھی وزراءکے ساتھ ملکر دونوں میں ثالث/ پل کاکردار ادا کرکے دونوں کو مذکرات کے میز پر لانے کےلئے خلوص نیت سے کردار ادا کرینگے سنیئر صوبائی وزیر خزانہ حاجی نورمحمد خان دمڑ نے کہاکہ بلوچستان ایک غریب صوبہ ہے جن کے ریونیو کم اور مسائل بہت زیادہ ہے

ان تمام مسائل کے حل کےلئے وقت درکار ہے وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو ینگ ڈاکٹرز،پیرامیڈیکس کے جائز مسائل حل کرنے کےلئے سنجیدہ ہے انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت اپنے محدود وسائل میں ریتے ہوئے صوبے کے عوام اور تمام محکموں کے مسائل کے حل کےلئے جنگی بنیادوں پراقدامات کررہی ہیںسنیئر صوبائی وزیر خزانہ حاجی نورمحمد خان دمڑ نے کہاکہ ڈاکٹرز ، پیرامیڈیکس ، نرسز کی تنخواہ بڑھانے سے سالانہ صوبہ کے خزانہ پر 7 ارب روپے کا بوجھ پڑے گا

انہوں نے کہاکہ ینگ ڈاکٹرز ، پیرامیڈیکس لچک کا مظاہرہ کرے اور صوبے میں جاری او پی ڈیز کا بائیکاٹ ختم کرکے حکومتی کمیٹی کے ساتھ بیٹھ کر پیش کردہ مسائل کا کوئی درمیانی راستہ نکالے تاکہ صوبے پر مالی بوجھ بھی نہ بڑ جائے اور مطالبات ہوجائے انہوں نے کہاکہ اگر ینگ ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکس فراخ دلی کا مظاہرے کرتے ہوئے ایک قدم آگے بڑھے گے تو حکومت دو قدم آگے بڑے گی ۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں