منی بجٹ کیخلاف سندھ ہائیکورٹ میں درخواست دائر

0 27

کراچی: منی بجٹ کیخلاف سندھ ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی گئی۔

وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جانب سے پارلیمنٹ میں پیش کیے جانے والے فنانس سپلیمنٹری بل 2023 یا منی بجٹ کے تحت ان کی جانب سے 170 ارب روپے کے اضافی ٹیکس اکٹھے کرنے کا ہدف رکھا گیا ہے

درخواست مولوی اقبال حیدر کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ غریب عوام روز بہ روز مہنگائی تلے پس رہی، مزید مہنگائی کا سلسلہ جاری ہے جبکہ راتوں رات 20 روپے پٹرول میں اضافہ کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ گھریلو اشیا پر ٹیکس لگائے جارہے ہیں، ملکی صورتحال یہ ہے کہ منافع خور امیر تر ہوتے جارہا ہے غریب غریب ہو رہا ہے، پٹرول کی قیمتیں بڑھنے سے ہر اشیا کے ریٹ بڑھ جائیں گے۔

درخواست گزار نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات اور دیگر اشیا پر قمیتوں میں اضافہ آئین کے آرٹیکل 5، 8، 9  اور 18 کی خلاف ورزی ہے، وفاقی حکومت آئین کے مطابق معاملات چلانے میں ناکام رہی ہے۔

درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی کہ گزشتہ روز پیش کیے گیے منی بجٹ کو واپس لینے کا حکم دیا جائے،  وفاقی حکومت کو منی بجٹ پر عمل درآمد سے روکا جائے۔ درخواست میں میں وزارت خزانہ، اوگرا، ایف بی آر و دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔

خیال رہے کہ وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جانب سے قومی اسمبلی میں پیش کیے جانے والے منی بجٹ کے تحت ان کی جانب سے 170 ارب روپے کے اضافی ٹیکس اکٹھے کرنے کا ہدف رکھا گیا ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.