ملک کے حالات ٹھیک نہیں ،سپریم کورٹ جلداز جلد انتخابات کیلئے سو موٹو کی طرز پر اقدام کر ے ‘ شیخ رشید

0 65

رانا ثنا اللہ کا دماغی توازن ٹھیک نہیں ہے ،پرو یز الٰہی پنجاب کے وزیراعلیٰ منتخب ہوں گے ‘ سابق وزیر داخلہ کی لاہور میں پریس کانفرنس

لاہور سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ ملک کے حالات ٹھیک نہیں ہے ،سپریم کورٹ مداخلت کرے اور جلداز جلد انتخابات کیلئے سو موٹو کی طرز پر اقدام کر ے، مطالبہ کرتا ہوں والیم ٹین کو کھولا جائے تاکہ لوگوں کو پتہ چل سکے ان لوگوں کا کیا کردار تھا ،ایک ایسا وقت آ سکتا ہے کہ ملک چلانا کسی کے بس کی بات نہ رہے،نواز شریف (ن) لیگ کو گالیاں دے رہا ہے ،آصف زرداری نے مسلم لیگ (ن) کی سیاست کو لکشمی چوک میں دفن کر دیا ہے ، یہ دو بھائیوں کو لڑانے آیا تھا ، یہ دانہ ڈالتا ہے اورمال لگاتا ہے ،اگر یہ انتخابات کی طرف نہیں جاتے تو سب کو مل کر عبوری حکومت بنانا ہو گی ۔ لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ بائیس جولائی کو پرو یز الٰہی پنجاب کے وزیراعلیٰ منتخب ہوں گے ،جس معاشرے میںعوام کے منتخب نمائندے کو خریدا جائے اس سے بڑی لعنت کوئی اور نہیں ہوسکتی ۔ ممبر لوگ کسی پارٹی سے منتخب کرتے ہیں اوروہ پیسے لے کر کبھی ترکی اورکبھی کہیں چلے جاتے ہیں ،عوام ان کا سوشل بائیکاٹ کرے اور ان کا آئینی قانونی محاسبہ کرے۔ انہوںنے کہاکہ امپورٹڈ حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں اور انتخابات کے علاوہ کوئی حل نہیں ہے ، حکمران اتحاد چودہ سے اٹھائیس ہو جائے لیکن یہ عمران خان کا مقابلہ نہیں کر سکتے ، پی ڈی ایم رسوا ہوئی ہے ،یہ خوفزدہ ہیں اوران کو سمجھ نہیں آرہی ،تیس اگست آخری تاریخ اس سے پہلے انتخابات کا اعلان ہو جانا چاہیے ورنہ ملک کو سنبھالنے کسی کے بس کی بات نہیں رہے گا ،کوئی مرکز میں حکومت چلانے کی پوزیشن میں نہیں ہوگا۔ انہوںنے کہا کہ عقل کے اندھے عمران خان کے خلاف آرٹیکل چھ کی باتیں کر رہے ہیں ، رانا ثنا اللہ کا دماغی توازن ٹھیک نہیں ہے ،میں اس نتیجے پر پہنچا ہو ں کہ مسلم لیگ (ن) کے سیاسی تابوت میں آخری کیل رانا ثنا اللہ ٹھوکے گا۔انہوںنے کہا کہ میں جب کہتا تھا کہ (ن) سے (ش)نکلے گی تو لوگ میرا مذاق اڑاتھے ،آج نواز شریف لندن میں ہے ،اسحاق ڈار آئے اس کی تو واپسی کی تاریخ دی ہوئی تھی ۔ مفتاح ہنسی سے مفتا لگاتا ہے ، ہنسی سے کہتا ہے پیٹرول کی قیمت تو بڑھے گی لعنت ہے تمہاری سیاست پر ،غریب کا گلا گھونٹ کر تمہیںہنسی آتی ہے یہ چیخوں میں بدلنے جارہی ہے ،عوام بیدار ہیں ،عوام کی حالت خراب ہے ان کے پاس گھر کا سامان خرید نے کے لئے پیسے نہیں ، حکومت کے پاس گندم خریدنے کے پیسے نہیں، اگر حقیقت میں دیکھا جائے دیا جائے توڈالر 240کا ہو چکا ہے ، انہوںنے کسی بڑے ادارے کا سربراہ نہیں لگایا،اسٹیٹ بینک جیسے ادارے کا گورنر لگانے کی پوزیشن میں نہیں ہیں ۔یہ لوگوں پر کیسز بنانے کی بات کرتے ہیں ، اب تو ہمارے اوپر اتنے کیسز ہو گئے ہیں کہ شاید ہمیں ضمانت دینے والے لوگ نہ ملیں ۔ میں اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس اطہر من اللہ کا شکر گزار ہوں انہوںنے میرے سارے کیسز اکٹھے کر دئیے ورنہ کون اتنے کیسز میں ضمانت دیتا۔شیخ رشید نے کہا کہ ملک قیاس میں چلا گیا ہے ، انتشار اور خلفشار میں چلاگیا ہے ،لوگ ذہنی بیماری کاشکار ہو گئے ہیں ،عوام موجودہ حکمرانوں کے چہرے نہیں دیکھنا چاہتے ، جب شام میں حکومتی عہدیدار کسی چینل پر آتے ہیں تو لوگ چینل بدل دیتے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ اراکین اسمبلی نے آج وزیر اعلیٰ کے انتخاب میں اپنی ذمہ داری ادا کرنی ہے اور اپنی پارٹیوں کے ساتھ کھڑے ہوں اور جس جھنڈے تلے ووٹ لیا ہے اس کی عزت کے لئے لڑیں ، ان شا اللہ سیاست اب ایک نیا رخ اختیار کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے ڈی جی اینٹی کرپشن کے خلاف درخواست دائر کر دی ہے ،اوورسیز پاکستانیوں کا ووٹ نوے لاکھ سے ایک کروڑ ووٹ ہے اس کے لئے بھی سپریم کورٹ میں درخواست دائر کی ہے اور مجھے امید ہے کہ سپریم کورٹ اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دے گی ، اوورسیز پاکستانی ہمیں50ارب ڈالر بھجواتے ہیں ۔آئی ایم ایف سے ایک ارب ڈالر خیرات کے لئے قوم کو نیزے پرلٹکا دیا گیاہے اور ابھی تک بیل آئوٹ پیکج نہیں ملا ، ہمیں1.9ارب ڈالر ملنے تھے انہیں1.2ارب ڈالر مل رہے ہیں ۔ا نہوں نے کہا کہ نیب ترامیم کے خلاف عمران خان نے رٹ دائر کی ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ اراکین اسمبلی کو تیس سے چالیس کروڑ کی پیشکش کی جارہی ہے ،آصف زرداری کے ساتھ چہرے ددیکھیں جو اس کے انویسٹر ہیںان کے پاس منی لانڈرنگ کا کا مال ہے ، یہ نیب کے قانون کے ڈر سے انویسٹ کر رہے ہیں، انہیں معلوم ہے کہ اگر پنجاب نکل گیا تو پھر عمران خان کا راستہ کون روکے گا ،ملک کو ایک مقبول لیڈر کی ضرورت ہے چور لیڈر کی ضرورت نہیں،منی لانڈر لیڈر کی ضرورت نہیں ، جس شخص پر اگلے دن فرد جرم لگنی ہو اسے وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ بنا دیں تو پھر قانون کہاں کھڑا ہے ، سپریم کورٹ سے مایوسی سے کہنا چاہتا ہوں لوگ بہت سخت تنگ ہیں ،لوگ اس طرح گھروں سے نکلیں گے وہ یہ بھول جائیں گے کہ سیاست کیا ہوتی ہے ،ایک دوسرے کے گلے پڑیں گے، لوگوںکے گھروںکے حالات خراب ہیں، جنہوںنے دولت لوٹی ہوئی ہے ان کے معاملات ٹھیک ہے ۔ سپریم کورٹ جلدی انتخابات کے لئے مداخلت کرے ،جس طرح ہمارے معاملے میں سو موٹو آیا یہاں بھی اس طرز پر اقدام ہونا چاہیے ۔انہوںنے کہاکہ اگر ہم الیکشن کی طرف نہ گئے توفسادات شروع ہوں گے، اندرون سندھ اور بلوچستان میں کیا ہو رہا ہے، پنجاب میں ہو گیا تو پھر کیا ہوگا۔ا انہوںنے کہاکہ ایک عبوری حکومت مل کر بنائیں ، عمران خان نے کہا ہے کہ واحد حل ہے انتخابات ہیں اور یہی ساری قوم کی زبان ہونی چاہیے ، عمران خان چودہ گندے انڈے ایک ہی ٹھوکر سے اڑا دے گا۔ انہوںنے کہاکہ آصف زرداری اس لئے سرمایہ کاری کر رہا ہے کیونکہ پاپڑ والے آئسکریم والے اوردہی بھلے والے کے اکائونٹ سے ربوں روپے جونکلے ہوئے ہیں ،نیب کی ترمیم کے تحت کوئی پوچھ نہیں سکتا،اس لئے یہ حکومت رہنی چاہیے ۔ انہوںنے کہا کہ عمران خان جوکہے گا سارے اس پر عمل کریں گے ،پرویز الٰہی نے کہا کہ اگر عمران خان کہے تو میںآدھے گھنٹے میں اسمبلی توڑ دوں گا۔انہوںنے کہاکہ مولانا فضل الرحمان اپنی جیب سے مال نیں لگاتا، آصف زرداری نے حرام کی کمائی نواز شریف کا مقابلہ کرنے کے لئے اکٹھی کی ۔ آصف زرداری کو یہ بھی پتہ ہے کہ عمران خان نے فیصلہ کیا ہے وہ اندون سندھ کا ہمہ گیر دورہ کرے گا تو یہ لے دے گا ، پھر ان کی لوٹی ہوئی دولت ہے اورسرمایہ کار کدھر جائیں گے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.